میر ہزار خان بجارانی کو قتل کیا گیا یا خود کشی تھی؟ واقعہ نیا رُخ اختیار کر گیا، تمام گولیاں نشانے پر نہیں لگیں بلکہ تین گولیاں۔۔۔! حیرت انگیز انکشافات

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) ڈیفنس کے علاقے میں گھر سے صوبائی وزیر اور پیپلز پارٹی کے رہنما میر ہزار خان بجارانی اور ان کی اہلیہ کی لاشیں ملی ہیں جس کے بارے کہاجا رہا ہے کہ واقعہ صبح ساڑھے چھ بجے کے قریب پیش آیا اور اس وقت ملازمین بھی گھر پر نہیں تھے۔ ایک نجی ٹی وی چینل کا کہنا ہے کہ ابتدائی تفتیش کے مطابق جس وقت واقعہ پیش آیا اس وقت ملازمین گھر پر موجود نہیں تھے اور یہ واقعہ صبح ساڑھے چھ بجے کے قریب پیش آیا، دونوں میاں بیوی کے سر میں ایک ایک گولی لگی جبکہ

ایک گولی کا نشان دیوار پر بھی موجود تھا اور مس ہو جانے والی تین گولیاں چیمبر میں موجود ہیں، میر ہزار خان بجارانی کی لاش صوفے پر پڑی تھی جبکہ اہلیہ کی لاش فرش پر پڑی تھی۔دریں اثناء ڈیفنس کے علاقے میں گھر سے صوبائی وزیر میر ہزار خان بجارانی اور اہلیہ فریحہ رزاق کی لاشیں ملی ہیں، کراچی کے علاقے ڈیفنس کے ایک گھر سے صوبائی وزیر میر ہزار خان بجارانی اور ان کی اہلیہ کی لاشیں ملی ہیں۔ صوبائی وزیر کے پرائیوٹ سیکریٹری اللہ ورایو نے تصدیق کی ہے کہ میر ہزار خان بجارانی مردہ حالت میں پائے گئے ہیں۔ذرائع کے مطابق میر ہزار خان بجارانی اور انکی اہلیہ فریحہ رزاق کو گولیاں لگی ہیں۔ذرائع کے مطابق اہل خانہ کا بتانا ہے کہ کمرے کا دروازہ توڑ کر دونوں کی لاشیں نکالی گئی ہیں۔ریسکیو ذرائع کے مطابق ون فائیو پر اطلا ع ملی تھی کہ ایک گھر سے دو لاشیں برآمد ہوئی ہیں۔میر ہزار خان بجارانی1974 اور 1977میں سندھ کے رکن اسمبلی منتخب ہوئے جبکہ 1988 میں سینیٹر منتخب ہوئے تھے۔وہ مسلسل چار انتخابات سے رکن اسمبلی منتخب ہوئے تھے۔ان کے صاحبزادے بھی رکن اسمبلی تھے۔سن2013 کے عام انتخابات میں میر ہزار خان بجارانی سندھ اسمبلی کے حلقہ پی ایس 16 سے ممبر صوبائی اسمبلی منتخب ہوئے تھے، ان کے پاس پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ کی وزارت کا قلمدان تھا۔میرہزار خان بجارانی جیکب آباد سے رکن صوبائی اسمبلی منتخب ہوئے تھے۔

مرحوم پی ایس 16 جیکب آباد سے رکن سندھ اسمبلی منتخب ہوئے تھے اور سندھ کے وزیر پلاننگ اینڈ ڈیولپمنٹ تھے۔میر ہزار خان بجارانی کا تعلق کرم پور تعلقہ تنگوانی ضلع کشمور کندھ کوٹ سے تھا۔ وہ وزیر تعلیم اور وزیر صنعت و پیداوار بھی رہ چکے ہیں۔مرحوم نے 1966 میں پیپلز پارٹی میں شمولیت اختیار کی تھی، افسوسناک اطلاع کے بعد پیپلز پارٹی کے رہنماان کے گھر پہنچ گئے۔ادھرنجی ٹی وی دنیا نیوز نے دعویٰ کیا ہے کہ یہ بھی کہا جا رہا ہے کہ دونوں کو قتل نہیں کیا گیا بلکہ میر ہزار خان بجارانی نے خودکشی کی ہے کیونکہ گولیاں ان کے سر میں لگی ہیں۔ انہوں نے پہلے اپنی اہلیہ کو قتل کیا اور پھر خود کو گولی مار کر خودکشی کر لی۔ پولیس نے جائے وقوعہ نے اسلحہ اور گولیوں کے خول بھی برآمد کر لئے ہیں۔

ایف آئی اے حکام نے بٹ خیلہ سے چائلڈ پورنو گرافرگرفتارکر لیا

پشاور(مبشر لقمان): ایف آئی اے حکام نے بٹ خیلہ سے چائلڈ پورنو گرافرگرفتارکر لیا.تفصیلات کے مطابق بچوں کے ساتھ زیادتی کے واقعات ہمارے معاشرے میں بڑھتی ہوئی اخلاقی گراوٹ کی نشانی ہیں.بچوں کی برہنہ تصاویر اور ویڈیوز بنا کر انہیں اپلوڈ کرنا بھی ایک انتہائی اہم مسئلہ بنتا جا رہا ہے.چند روز

پہلے جھنگ سے ایک اعلیٰ تعلیم یافتہ چائلڈ پورنو گرافر کو گرفتار کیا گیا تھا .اب تازہ ترین اطلاعات کے مطابق ایف آئی اے حکام نے بٹ خیلہ سے چائلڈ پورنو گرافرگرفتارکر لیا.ملزم نے سوشل میڈیا پر خاتون کے نام سے جعلی اکاونٹ بنایا تھا.ملزم بچوں کیساتھ دوستی کرکے ویڈیو اورتصاویر بناتا تھا.ملزم کو تفتیش کے لیے پشاور منتقل کر دیا گیا.

نقیب اللہ محسود قتل کیس ،معاملہ عدالت سے باہر ہی نمٹ گیا،مقتول کے خاندان کے بڑوں کے ساتھ ملکر راؤ انوار نے خاموشی سے کیا کام کردیا؟ حیرت انگیزانکشافات

کراچی (مبشر لقمان ) نقیب اللہ محسود قتل کیس میں خاندان سے دیت کے معاملات طے پانے کے قریب ہیں۔ذرائع کا کہنا ہے کہ نقیب اللہ کے خاندان سے راؤ انوار کی جانب سے دیت کے معاملات طے کیے جارہے ہیں اور اس سلسلے میں نقیب اللہ کے خاندان کے بڑوں کو آن بورڈ لے لیا گیا ہے۔ذرائع نے دعوی کیا ہے کہ سپریم کورٹ کی اگلی سماعت سے قبل دیت کا معاملہ طے پا جائے گا۔ ذرائع نے کہا کہ راؤ انوار کی جانب سے دیت کے معاملات کون طے کر رہا ہے یہ ابھی نہیں بتا

کھیل کی دنیاسے خوشخبری : نیوزی لینڈ سے شکست کھانے کے باوجود پاکستان کو بڑی خوشخبری مل گئی

آکلینڈ (کھیل ) اس وقت نیوزی لینڈ 125 پوائنٹس کے ساتھ پہلے اور پاکستان 124 پوائنٹس کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے ۔اگر پاکستان تیسرے میچ میں کامیاب رہا تو 126 پوائنٹس کے ساتھ پہلے نمبر پر آجائے گا۔ پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان ٹی ٹونٹی سیریز کا آخری اور فیصلہ کن معرکہ کل ہو گا۔ دونوں ٹیموں کے درمیان سیریز ایک ایک سے برابر ہے

، گرین شرٹس نے اہم میچ سے قبل خوب پریکٹس کی، میچ پاکستانی وقت کے مطابق دن گیارہ بجے شروع ہوگا۔گرین شرٹس نے سیریز میں کامیابی پر نظریں جما لیں، اہم میچ میں فتح کیلئے ماؤنٹ مونگانوئی میں سرفراز الیون نے بھرپور ٹریننگ کی، کھلاڑیوں نے بیٹنگ، فیلڈنگ اور فٹنس پر بہت محنت کی، تیسرے میچ کیلئے قومی ٹیم میں تبدیلی کا امکان نہیں۔ کیویز کی جانب سے زخمی کولِن مونرو اور گلین فلِپس ٹیم کا حصہ نہیں ہوں گے۔ دونوں ٹیمیں پاکستانی وقت کے مطابق اتوار کی صبح گیارہ بجے ان ایکشن ہوں گی۔ دوسرے ٹی ٹونٹی میں پاکستان نے نیوزی لینڈ کو جیت کےلئے 202رنز کا ہدف دے دیا ہے ۔ تفصیلات کے مطابق نیوزی لینڈ اور پاکستان کے درمیان تین ٹی ٹونٹی میچز پر مشتمل سیریز کے دوسرے میچ میں پاکستان نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا،مہمان ٹیم کیلئے اننگز کا آغاز فخرزمان اور احمد شہزاد نے کیا، دونوں اوپنرز نے جارحانہ کھیل کا مظاہرہ کرتے ہوئے 94 رنز کی شراکت قائم کیجس کے بعد احمد شہزاد 44 رنز بناکر آﺅٹ ہوگئے ،فخرزمان نے نصف سنچری سکور کی اور 96 کے مجوعی سکور پر آﺅٹ ہوگئے۔کپتان سرفراز احمد اور بابر اعظم نے اوپنرز کے عمدہ آغاز کا بھرپور فائدہ اٹھاتے

ہوئے 48گیندوںپر 91رنز کی شراکت داری قائم کی ،سرفراز احمد24گیندوں پر 2چوکوں اور3چھکوں کی مدد سے 41رنز بنانے کے بعد ویہلر کی گیند پر آﺅٹ ہوئے ، آخری اوورز کابھر پور فائدہ اٹھانے کے لیے بھیجے گئے فہیم اشرف بھی کچھ نہ کرسکے اور بغیر کوئی رن بنائے پوویلین لوٹ گئے ، بابر اعظم نے اننگز کی آخری گیند پر چوکارسید کرکے اپنے ٹی ٹونٹی کیریئر کی تیسری نصف سنچری مکمل کرنے کے ساتھ ساتھ پاکستان کا سکور4وکٹوں کے نقصان پر 201رنز تک پہنچایا ، وہ 29گیندوں پر 5چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 50رنزکے ساتھ ناٹ آﺅٹ رہے۔پاکستانی ٹیم کو نیوزی لینڈ کے ٹور میں ابھی تک مسلسل ناکامیوں کا سامنا ہے، ون ڈے سیریز میں کلین سویپ کے بعد ویلنگٹن میں کھیلے جانے والے پہلے ٹی ٹونٹی میں بھی قومی ٹیم کو شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا اور سیریز میں واپسی کےلئے پاکستان کو آج کا میچ جیتنا ضروری ہے۔واضح رہے کہ نیوزی لینڈ پاکستان کو 5 ایک روزہ میچوں کی سیریز میں وائٹ واش کرچکا ہے جب کہ ٹی ٹونٹی سیریز میں بھی نیوزی لینڈ کو 0-1 کی برتری حاصل ہے۔ واضح رہے کہ نیوزی لینڈ پاکستان کو 5 ایک روزہ میچوں کی سیریز میں وائٹ واش کرچکا ہے جب کہ ٹی ٹونٹی سیریز میں بھی نیوزی لینڈ کو 0-1 کی برتری حاصل ہے۔

راولپنڈی میں بچی سےمبینہ زیادتی کی کوشش،ملزم کو گرفتار کرکے تھانا بیرونی میں مقدمہ درج کر لیا گیا

راولپنڈی میں بچی سےمبینہ زیادتی کی کوشش کرنے والاملزم گرفتار، تھانا بیرونی میں مقدمہ درج کر لیا گیا.تفصیلات کے مطابق راولپنڈی میں ڈھوک لکھن کے علاقے میں بچی سےمبینہ زیادتی کی کوشش کی گئی،.بچی کے شور مچانے پر گھر والے موقع پر پہنچ گئے جس پر دکاندار فرار ہو گیا.والد

نے تھانہ بیرونی میں ملزم کے خلاف درخواست دے دی .درخواست کے مطابق دکاندارنےبچی سےزیادتی کی کوشش کی،گھروالوں کےپہنچنےپردکاندار دکان سے فرار ہوگیا.پولیس نے ملزم کو گرفتار کرکے تھانا بیرونی میں مقدمہ درج کر لیا .

راؤ انوار ایک درندہ ہے ۔۔۔یہ کس کام کے لیے لوگوں کو قتل کرتا ہے ؟ اسپیکر اسمبلی نے تشویشناک انکشافات کرتے ہوئے سرعام پھانسی کا مطالبہ کر ڈالا

کراچی(یونیلاد پاکستان) راؤ انوار درندہ ہے جو پیسوں کے لیے لوگوں کو اٹھاتا ہے اسے سرعام پھانسی دی جائے۔ اسپیکر خیبر پختون خوا اسمبلی اسد قیصر کا بیان ۔نجی ٹی وی کے مطابق قبائلی نوجوان نسیم اللہ عرف نقیب اللہ محسود کے خون کا حساب مانگنے کے لیے قبائلی عمائدین کا کراچی کے علاقے سہراب گوٹھ میں تعزیتی کیمپ کئی روز سے جاری ہے

جس سے خطاب کرتے ہوئےخیبر پختون خوا اسمبلی کے اسپیکر اسد قیصر کا کہنا تھا کہ نقیب اللہ، انتظار اور مقصود کے اہل خانہ سے اظہار تعزیت کرتا ہوں، کے پی کے اسمبلی نقیب اللہ کے والد کے ساتھ کھڑی ہے۔اسد قیصر کا کہنا تھا کہ راؤ انوار درندہ ہے جو پیسے لینے کے لیے لوگوں کو اٹھاتا ہے، اس کے مقابلوں کی عدالتی تحقیقات کرائی جائیں اور راؤ انوار کو سرعام پھانسی دی جائے۔واضح رہے کہ راؤ انوار کے مبینہ پولیس مقابلے پر بننے والی تحقیقات کمیٹی نے نقیب اللہ محسود کو بے گناہ اور پولیس مقابلےکو جعلی قراردیا ہے جب کہ راؤ انوار تحقیقاتی کمیٹی سامنے پیش نہیں ہورہے اور روپوش ہوچکے ہیں۔دوسری جانب راؤ انوار کے ملیر میں تین فارم ہاؤ سز میں ٹارچر سیلز کا انکشاف، بے گناہ شہریوں کو اٹھاکر لایا جاتا اور اہل خانہ سے لاکھوں روپے تاوان وصول کیا جاتا ، تاوان ادا نہ کرنے والوں کو جعلی مقابلوں میں دہشتگرد قرار دیکر ہلاک کر دیا جاتا، اس کام کیلئے خصوصی ٹیم تشکیل دے رکھی تھی،نقیب اللہ محسود اور اس کے دوستوں کو بھی تاوان کی بھاری رقم حاصل کرنےکیلئے ہوٹل سے اٹھایا، دوست بھاری تاوان لیکر چھوڑ دئیے جبکہ نقیب اللہ محسود کو رقم

نہ ملنے پر جعلی مقابلے میں مروا دیا گیا، قومی اخبار کی رپورٹ میں ہولناک انکشافات سامنے آگئے۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان کے معتبر قومی اخبار کی رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ راؤ انوار کراچی شہر میں اغوا برائے تاوان کا ایک بہت بڑا ریکٹ چلا رہا تھا اور اس نے ملیر کے علاقے میں تین فارم ہائوسز میں ٹارچر سیلز قائم کر رکھے تھے جبکہ بیگناہ شہریوں کو شہر کےمختلف علاقوں سے اٹھا کر ان ٹارچر سیلوں میں لایا جاتا اور ان کے اہل خانہ سے لاکھوں روپے تاوان وصول کیا جاتا۔جن افراد کے اہل خانہ تاوان ادا نہ کر سکتے ان کو جعلی پولیس مقابلوں میں دہشتگرد قرار دیکر ہلاک کر دیا جاتا ۔ رائو انوار نے اس مذموم دھندے کیلئے ایک خصوصی ٹیم تشکیل دے رکھی تھی۔ راؤ انوار کے اغوا کار ٹیم کے اہلکار شہرکے مختلف علاقوں سے ایسے شہریوں کو اٹھاتے تھے، جن کے پاس کم سے کم 10 لاکھ روپے نکل سکیں، اغوا کار ٹیم کے مخبر ملیر زون میں دوسرے شہروں سے آنے والے شہریوں کا مکمل ڈیٹا جمع کرتے تھے اور ان سے دوستیاں کرنے کے بعد ان کا بینک بیلنس معلوم کرتے تھے،جس کے بعد وہ اغوا کار ٹیم کے اہلکاروں کو شہری

کی مکمل معلومات اور لوکیشن بتاتے تھے، جس کے بعد راؤ انوار کی بنائی گئی اغوا کار ٹیم شہری کو اٹھا کر ٹارچر سیلمیں لے آتی تھی اور دو سے تین دن تشدد کرنے کے بعد اس کے بارے میں تمام معلومات جمع کرکے اس ے اہلخانہ سے مخبروں کے ذریعے رابطہ کرواتی تھی۔اور تاوان کی رقم کے حوالے سے معاملات طے کئے جاتے تھے۔ رقم ملنے کے بعد ان شہریوں کو سپر ہائی وے پر چھوڑ دیا جاتا تھا۔اخباری ذرائع کے مطابق راؤ انوار کی اغوا کار ٹیم نے تین جنوری کو نقیب کو اس کے دو دوستوںقاسم اور علی کے ساتھ ابوالحسن اصفہانی روڈ پر واقع ہوٹل سے اٹھایا تھا، بعد میں نقیب کے دو دوستوں کو بھاری تاوان کی رقم لے کر رہا کردیا تھا۔ اخبار کا کہنا ہے کہ راؤ انوار کی ٹیم کے ایک مخبر نے نقیب کے بارے میں بتایا تھا کہ اس کے پاس کم سے کم 50 لاکھ روپے سے زائد رقم ہےاور اس نے الآصف سکوائر پر 2 دکانیں بھی کرائی پر لی ہیں، جن کا ایڈوانس ایک لاکھ روپے سے زائد ادا کیا ہے۔اس کے علاوہ اس نے اپنے گاؤں سے بھی رقم منگوائی ہے۔خیال رہے کہ تاوان ادا نہ کرنے والوں کو جعلی مقابلوں میں دہشتگرد قرار دیکر ہلاک کر دیا جاتا، اس کام کیلئے خصوصی ٹیم تشکیل دے رکھی تھی،نقیب اللہ محسود اور اس کے دوستوں کو بھی تاوان کی بھاری رقم حاصل کرنےکیلئے ہوٹل سے اٹھایا، دوست بھاری تاوان لیکر چھوڑ دئیے جبکہ نقیب اللہ محسود کو رقم نہ ملنے پر جعلی مقابلے میں مروا دیا گیا،

’’پنجاب کی طرح خیبرپختونخواہ پولیس بھی ہڈ حرام نکلی ‘‘ مردان کی عاصمہ کیساتھ قتل سے قبل زیادتی چھپانےکی کوشش، پنجاب فرانزک لیب نے بھانڈا پھوڑ ڈالا، چیف جسٹس کا از خود نوٹس

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)مردان کی 4سالہ عاصمہ قتل کیس پر چیف جسٹس کا ازخود نوٹس، پنجاب فرانزک سائنس ایجنسی نے زیادتی کی تصدیق کر دی۔ تفصیلات کے مطابق مردان کی 4سالہ عاصمہ قتل کیس پر چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے سوموٹو ایکشن لے لیا ہے جبکہ دوسری جانب پنجاب فرانزک سائنس ایجنسی نے 4سالہ عاصمہ کے ساتھ قتل سے قبل زیادتی کی تصدیق کر دی ہے۔

پنجاب فرانزک سائنس ایجنسی کے ڈی جی ڈاکٹر اشرف طاہر کے مطابق عاصمہ کے ساتھ قتل سے قبل زیادتی ثابت ہو گئی ہے۔ عاصمہ کے جسم سے حاصل کردہ نمونوں میں اس سےزیادتی کی تصدیق ہوئی ہے۔ واضح رہے کہ مردان میں چند دن قبل جب قصور کی 7سالہ زینب کے قتل کا واقعہ میڈیا کی زینب بنا ہوا تھا تب ایک 4سالہ بچی عاصمہ کی لاش گھر کے قریب کھیتوں سے ملی تھی جس پر جب پوسٹمارٹم کرایا گیا تو اس میں بھی بچی کے ساتھ زیادتی ثابت ہو ئی تھی تاہم مردان کے ڈی پی او نے بچی کے ساتھ زیادتی کی تردید کی جس پر مقامی ضلع ناظم نے میڈیا بریفنگ میں پولیس پر تنقید کرتے ہوئے زیادتی کی تصدیق کی تھی جبکہ اب پنجاب فرانزک سائنس ایجنسی نے بھی عاصمہ کے جسم سے حاصل کردہ نمونوں کو چیک کرنے کے بعد اس کے ساتھ زیادتی کی تصدیق کر دی ہےجبکہ چیف جسٹس آف پاکستان نے معاملے کا ازخود نوٹس لیتے ہوئے رپورٹ طلب کر لی ہے۔ خیال رہے کہ وزیراعلیٰ خیبرپختونخواہ پرویز خٹک بھی معاملہ میڈیا پر آنے کے بعد عاصمہ کے اہل خانہ سے تعزیت اور فاتحہ خوانی کیلئے اس کے گھر گئے تھے جہاں انہوں نے عاصمہ کے قاتلوں کی گرفتاری اور عبرتناک سزا دلوانے کی لواحقین کو یقین دہانی کرائی تھی مگر خیبرپختونخواہ پولیس ابھی تک عاصمہ قتل کیس پر ابتدائی تحقیقات بھی مکمل نہیں کر سکی جس سے اس کی معاملے میں سنجیدگی کا بخوبی اندازہ لگایا جا سکتا ہے۔زینب کے قاتل عمران کی

گرفتاری کی تصدیق کیلئےکی جانے والے پریس کانفرنس میں وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے خیبرپختونخواہ حکومت کو عاصمہ قتل کیس کے حوالے سے ہر طرح کے تعاون کی پیش کش کی تھی جس کے بعد خیبرپختونخواہ حکومت نے پنجاب حکومت سے رابطہ کرتے ہوئے فرانزک مدد حاصل کی تھی اور عاصمہ کے جسم سے حاصل کردہ نمونے پنجاب فرانزک لیب کو بھجوائے تھے۔

نواز شریف اور مریم نواز کی ہری پور جلسہ میں آمد عمران خان اور آصف زرداری سوچ بھی نہیں سکتے لیگی کارکنوں نے ایسا کام کر ڈالا کہ نیا ریکارڈ بن گیا

ہری پور(آئی این پی ) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر سابق وزیراعظم نواز شریف اور مریم نواز کے ہری پور پہنچنے پر پر تباک استقبال کیا گیا ، نواز شریف کی آمد پر 8 من پھولوں کی پتیاں ہیلی کاپٹر سے نچھاور کی

گئیں ۔ ہفتہ کو سابق وزیراعظم نواز شریف اور مریم نواز ہری پور پہنچے تو و ہاں پر لیگی کارکنوں نے انکا پر تباک استقبال کیا اور ان کی آمد پر 8 من پھولوں کی پتیاں ہیلی کاپٹر سے نچھاور کی گئیں ۔

ننھی زینب کا قتل، سپارہ پڑھنے ساتھ جانیوالا بچہ بول پڑا،اہم انکشافات کر دئیے

ننھی زینب کے قتل کی تحقیقات کا باقاعدہ سنجیدہ انداز میں آغاز ہو چکا ہے اور پولیس ملزم کو تلاش کرنے کیلئے سرگرداں ہو چکی ہے۔ نجی ٹی وی چینل سے بات کرتےہوئے مقتولہ زینب کے ساتھ روزانہ قرآن پاک کی تعلیم کیلئے جانے والے بچے نے انکشافات کئے ہیں۔ 7سالہ عثمان نے بتایا کہ میں اور زینب دونوں روزانہ سپارہ پڑھنے ساتھ جاتے تھے جس دن زینب اغوا ہوئی میں زینب کے ساتھ اس کے کمرے میں ہی موجود تھا۔ زینب مجھ سے پہلے ہی وضو کر کے

سپارہ پڑھنے کیلئے گھر سے نکل گئی، زینب کو سپارہ پڑھنےکیلئے جاتا دیکھ کر میں بھی پیچھے پیچھے اس کے گھر سے نکل گیا جب میں سپارہ پڑھانے والی خالہ کے گھر پہنچا تو وہاں زینب کو موجود نہ پایا ۔ سپارہ پڑھانے والی خالہ نے بھی مجھ سے زینب سے متعلق سوال کیا کہ آج زینب کیو ں نہیں آئی تو میں نے بتا یا کہ وہ تو مجھ سے پہلے ہی سپارہ پڑھنے کے لیے آگئی تھی۔ زینب کے چچا کا کہنا ہے کہ جیسے ہی ہمیں پتہ چلا کہ زینب سپارہ پڑھنے نہیں پہنچی اور لاپتہ ہے تو ہم اس کو ڈھونڈنے میں سرگرداں ہو گئے مگر پولیس نے ہمارے ساتھ تعاون نہیں کیا۔ ہم زینب کو تلاش نہیں کر سکے۔

زینب کے اندوہناک قتل پر اہل پاکستان ہی نہیں بلکہ نبی کریمؐ کے شہر مدینہ منورہ کے لوگ بھی غمزدہ، عمرہ کے دوران جب والدین گڑگڑا کر بچی کیلئے دعائیں مانگ رہے تھے تب کیا ہوا، جگر کو چھلنی کر دینے والا واقعہ

)قصور کے اندوہناک واقعہ نے جہاں پوری قوم کو ہلا کررکھ دیا وہیں ننھی شہیدہ کے والد کی گزشتہ رات میڈیا سے گفتگو نے اہل پاکستان کیا اہل اسلام تک کی آنکھیں نم کردیں۔ مقتولہ زینب کے والد محمد امین نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ جب زینب پیدا ہوئی تو اہل بیتؓ کی محبت میں بچی کا نام انہوں نے زینب رکھا تھا۔ عمرے کی ادائیگی کیلئے جب میں سعودی عرب میں تھا تو وہاں مدینہ منورہ میں زینب کی گمشدگی کیا

طلاع ملی ، جب ہم دونوں میاں بیوی زینب کی سلامتی اور بحفاظتبازیابی کیلئے گڑگڑا کر دعائیں مانگ رہے تھے تو وہاں موجود لوگ حیران تھے کہ نہ جانے ان کو کیا پریشانی ہے؟اور جب ہم نے ننھی زینب کی تصویر دکھائی تو ان کی بھی آنکھوں میں آنسو آگئے کہ یہ تو اتنی پیاری بچی ہے کون ظالم اسے اغواکر کے لے گیا ہے۔ محمد امین کا کہنا تھا کہ میری دعا ہے کہ جو اذیت ہم برداشت کر رہے ہیں اور جو سانحہ ہمارے ساتھ گزرا ہے ایسا کسی کے ساتھ نہ ہو۔