عاصمہ رانی قتل میں نیا موڑ:مرکزی ملزم کا دستِ راست گرفتار، نیا انکشاف ہو گیا

عاصمہ رانی قتل میں نیا موڑ:مرکزی ملزم کا دستِ راست گرفتار، نیا انکشاف ہو گیا

کوہاٹ (م ل)کے پی کے پولیس ابھی تک کافی لوگوں کو شاملِ تفتیش کر چکی ہے۔ پولیس نے کوہاٹ کے علاقے کے ڈی اے میں کارروائی کرتے ہوئے عاصمہ رانی قتل کیس کے مرکزی ملزم مجاہداللہ آفریدی کے قریبی دوست شاہزیب کو گرفتار کرلیا ہے۔ گرفتار ملزم اپنے دوست کیلئے عاصمہ رانی کی جاسوسی کیا کرتا تھا جبکہ واردات کے بعد اس نے ملزم

کو بیرون ملک فرار میں بھی مدد فراہم کی۔

پولیس کے مطابق عاصمہ رانی قتل کیس کے مرکزی ملزم مجاہد اللہ کاقریبی دوست شاہ زیب گرفتار کرلیا گیا ہے۔ ملزم شاہ زیب کوہاٹ کے علاقے کے ڈی اے میں رہتا ہے جبکہ عاصمہ رانی کا قتل بھی کوہاٹ میں ہی ہوا ہے۔ ملزم شاہ زیب مقتولہ عاصمہ پر نظر رکھتا تھا اور اس کی جاسوسی کرکے اس سے متعلق معلومات مرکزی ملزم مجاہد کو دیتاتھا۔عاصمہ رانی کے قتل والے دن ملزم شاہ زیب مجاہد کے ساتھ تھا ، واردات کے بعد شاہزیب نے ہی مرکزی ملزم کو بیرون ملک فرار ہونے میں مدد فراہم کی۔دوسری جانب عاصمہ رانی کے قتل کے وقت مرکزی ملزم مجاہد اللہ کے ساتھ آنے والے ملزم صادق کو پہلے ہی گرفتار کیا جا چکا ہے اور اس کی نشاندہی پر آلہ قتل برآمد کرلیاگیا ہے۔

واضح رہے کہ ایبٹ آباد میڈیکل کالج کی تھرڈ ائیر کی طالبہ عاصمہ چھٹیوں پر کوہاٹ آئی تھی جہاں اسے 27 جنوری کو اس وقت اسے گولیوں سے نشانہ بنایا گیا جب وہ اپنی بھابھی کے ساتھ رکشہ پر گھر پہنچی تھی ۔ عاصمہ کے گھر پہنچنے سے قبل ہی ملزم مجاہد اپنے ساتھی صادق کے ساتھ گھر کے باہر موجود تھا

جس نے موقع پر ہی فائرنگ کردی ، عاصمہ کو تین گولیاں لگیں جبکہ ملزمان فرار ہوگئے۔میڈیکل کی طالبہ کو زخمی حالت میں ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں وہ ایک روز بعد زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئی۔عاصمہ کی جانب سے ہسپتال میں دیے گئے بیان میں کہا گیا کہ اس پر فائرنگ کرنے والا مجاہد آفریدی تھا۔یاد رہے عاصمہ رانی قتل کیس میں نامزد ملزم صادق اللہ کے ریمانڈ میں مزید ایک روز کی توسیع کردی گئی جبکہ بیرون ملک فرار مرکزی ملزم مجاہد آفریدی کی گرفتاری کے لئے کوششیں جاری ہے۔تفصیلات کے مطابق عاصمہ رانی قتل کے مقدمے میں کے پی کےپولیس نےنامزد ملزم صادق اللہ کو سول جج ون کوہاٹ کی عدالت میں پیش کیا اور ریمانڈ میں تین دن توسیع کرنے کی استدعا کی، جس پرعدالت نے ریمانڈ میں ایک روز کی توسیع کردی۔قتل کے مرکزی ملزم مجاہد اللہ آفریدی کی گرفتاری کیلئے کے پی کے پولیس کی درخواست پر ایف آئی اے نےانٹرپول سے مدد طلب کرلی اور ملزم سے متعلق تمام تفصیلات فراہم کردی۔یاد رہے کہ کوہاٹ پولیس نے میڈیکل کی طالبہ عاصمہ رانی کے قتل میں نامزد مرکزی ملزم مجاہداللہ آفریدی کا بھائی صادق آفریدی کوگرفتار کرکے میڈیا کے سامنے پیش کیا تھا۔ڈی پی اوکوہاٹ کا کہنا تھا کہ دوسرا ملزم بھی جلدقانون کی گرفت میں ہوگا، تفتیشی ٹیم نے فوری رابطہ کرکے ملزمان کے نام ای سی ایل میں ڈالےگئے، پولیس اور تحقیقاتی اداروں کی طرف سے کوئی غفلت نہیں ہوئی۔واضح رہے گزشتہ ہفتے مجاہد اللہ آفریدی نے رشتے سے انکار پرمستقبل کی ڈاکٹر ،عاصمہ رانی کو گولیاں مار کرکے قتل کردیا تھا اور سعودی عرب فرارہوگیا تھا۔مقتولہ نے دم توڑنے سے قبل اپنے اہل خانہ کو مجاہد آفریدی کا نام بتایا تھا۔(ذ،ک)

Leave a Comment